اسلام آباد ، 16 جون (اے پی پی): وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی، اصلاحات و خصوصی اقدامات اسد عمر کی زیرصدارت نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر میں اجلاس منعقد ہوا جس میں آزادکشمیر و گلگت بلتستان سمیت صوبائی چیف سیکریٹریز ویڈیولنک کے ذریعے شریک ہوئے، اجلاس میں صوبوں نے این سی او سی کو کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں اور ملک بھر کے مخصوص علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن پر بریفنگ دی گئی۔

منگل کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ ملک بھر میں 24 گھنٹوں میں ایس او پیز کی 12400 خلاف ورزیاں کی گئی جس پر 24 گھنٹوں میں 1512 مارکیٹ، دکانوں، 14 انڈسٹریل یونٹس کو جرمانے و سیل کئے گئے جبکہ 1466 ٹرانسپورٹرز کو جرمانے کئے گئے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں اسلام آباد میں ایس او پیز کی 364 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی ہیں جس کے تحت 154 دکانیں سیل، 147 گاڑیوں کو جرمانے کئے گئے۔

گذشتہ 24 گھنٹوں میں آزادکشمیر میں ایس او پیز کی 865 خلاف ورزیاں ہوئیں جس کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے 153 مارکیٹ، دکانیں سیل، 321 گاڑیوں کو جرمانے عائد کئے گئے۔

گلگت بلتستان میں 24 گھنٹوں کے دوران ایس او پیز کی 218 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی ہیں جس پرگلگت بلتستان میں 48 مارکیٹ و دکانیں سیل، 53 ٹرانسپورٹرز کو جرمانے کئے گئے۔

 بریفنگ میں بتایا گیا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں خیبر پختونخوا میں ایس او پیز کی 5336 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی جس کے تحت 257 مارکیٹس و دکانیں سیل اور 104 ٹرانسپورٹرز کو جرمانے کئے گئے۔

پنجاب میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں ایس او پیز کی 3682 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی جس پر صوبہ بھر میں 655 مارکیٹ، دکانیں، انڈسٹریل یونٹ سیل اور 801 گاڑیوں کو جرمانے کئے گئے۔

 سندھ میں 24 گھنٹوں میں سندھ میں ایس او پیز کی 860 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی جس پرصوبہ بھر میں 41 مارکیٹ، دکانیں سیل، 7 گاڑیوں کو جرمانے کئے گئے جبکہ بلوچستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں ایس او پیز کی 1075 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئی جس پر صوبہ بھر میں 104 مارکیٹ و دکانیں سیل کی گئیں۔

وی این ایس،اسلام  آباد