لاہور، 16 جون(اے پی پی):صوبائی  وزیرِ اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے  کہا ہے کہ وزیرِ اعلیٰ پنجاب کی قیادت میں وزیرِ خزانہ ہاشم جواں بخت نے تاریخی بجٹ پیش کیا ہے۔کرونا، ٹڈی دل اور متوقع سیلاب کی تناظر میں یہ ایک نہایت متوازن اور متناسب بجٹ ہے۔ عالمی و ملکی سطح پر سخت ترین معاشی حالات کے باوجود جامع بجٹ حکومت کی کامیابی ہے

منگل کو جاری اپنے   ویڈیو  پیغام میں پنجاب کے بجٹ پر  خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ ٹیکسٹائل، لیدر، آئی ٹی، کیٹرنگ، گیسٹ ہاؤسز اور چھوٹے ہوٹلوں سمیت 20 سے زائد سروسز پر ٹیکس 16 فیصد سے 5 فیصد کیا جا رہا ہے۔ تعلیم، صحت اور اے ڈی پی کو پچھلے سال سے زیادہ فنڈز دیئے گئے ہیں۔موجودہ بجٹ میں گزشتہ سال کی نسبت 32 فیصد زیادہ ترقیاتی فنڈز رکھے گئے ہیں۔پرائمری ہیلتھ کیئر کیلئے 135.9 ارب، سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر کیلئے 148.5 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

صوبائی  وزیرِ اطلاعات پنجاب  نے کہا کہ پنجاب حکومت شروع دن سے ہی کفایت شعاری کی پالیسی پر عمل پیرا رہی ہے۔کفایت شعاری مہم کی مد میں نئی گاڑیوں کی خریداری کی ساٹھ فیصد درخواستیں مسترد، ڈیڑھ ارب کی بچت کی گئی۔ انھوں نے کہا کہ مالی سال 2020-21 میں تخمینہ شدہ صوبائی بچت 125 ارب روپے ہے جبکہ کرونا سے نمٹنے کے لیے بجٹ میں خصوصی ترجیحات متعین کی گئی ہیں۔حکومتِ پنجاب کوویڈ-19 سے متاثرہ معیشت کی بحالی کیلئے 56.5 ارب سے زائد کا ٹیکس ریلیف پیکج دے رہی ہے۔کوویڈ-19 سے نمٹنے کیلئے 25.22 ارب مختص کیے گئے ہیں۔یہ فنڈز انصاف امداد پروگرام، پی ڈی ایم اے، محکمہ زکوٰۃ اور پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر پر خرچ کیے جائیں گے۔

پنجاب کو ایک کاروبار دوست اور پروگریسو بجٹ دینے پر صوبائی وزیر نے کہا کہ وزیرِ اعلیٰ اور انکی ٹیم مبارکباد کے مستحق ہیں۔

 

وی  این ایس ، لاہور