لاہور، 12جون (اے پی پی): وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے شہباز شریف کا کورونا ٹیسٹ شوکت خانم یا آغا خان لیبارٹری اور سرکاری لیب سے کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا آل شریف کا بیک گراؤنڈ جھوٹ، فریب اور منافقت پر مبنی ہے، لیگی ترجمان شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار نہ بنیں۔

جمعہ کو  یہاں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ  9 جون کو شہاز شریف نیب میں پیش ہوئے، 10 جون کو انہوں نے کورونا کا ٹیسٹ کرایا، 11 جون کو شہباز شریف کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا، لیگی ایم پی اے کی طرف سے پنجاب اسمبلی میں نیب کیخلاف قرارداد پیش کی گئی، لیگی ترجمانوں نے شہباز شریف کے کورونا مثبت آنے پر گندی سیاست کی اور کورونا ٹیسٹ مثبت ہونے کا الزام نیب پر لگا دیا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور دنیا میں کرونا ٹیسٹ ایک لیبارٹری سے مثبت آتا ہے تو دوسری لیبارٹری سے وہ ہی ٹیسٹ منفی آجاتا ہے، اس لیے شہباز شریف کا کورونا ٹیسٹ شوکت خانم یا آغاخان لیبارٹری اور سرکاری لیب سے کرا کر تصدیق کرلی جائے۔

فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا شہباز شریف کو پیشی کے دوران کافی، بسکٹ اور نگٹس پیش کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ صوبے بھر میں 6545 افراد کیخلاف ایس او پیز کی خلاف ورزی پر ایکشن لیا گیا ہے۔ 33 ہائی رسک صنعتی یونٹس کیخلاف ایس او پیز کی خلاف ورزی پر کارروائی کی گئی ہے۔ ٹرانسپورٹ کیخلاف بھی ایس اوپیز کی خلاف ورزی کرنے پر ایکشن لیا گیا ہے۔

وی  این ایس،   لاہور